2.2 C
Washington DC.
Tuesday, January 19, 2021

اسلام کی اوڑھ میں مذہب کی سیاست

پاکستان کی ترقی کی راہ میں سب بڑی دو رکاوٹیں ہیں۔۔۔ایک بنیاد پرستی اور دوسری مذہبی شدت پسندی۔ حیرانگی اِس بات پر ہے کہ یہ 97 فیصد مسلم اکثریت والا ملک اِسلام کے ”ا“ سے بھی واقف نہیں ہے۔۔۔آپ زبردستی مسلمان نہ بن سکتے ہیں اور نہ ہی بنا سکتے ہیں۔۔۔آپ کا دین داڑھی سے نہیں نکلا۔۔۔آپ ابھی عورت کے پردے کا فیصلہ نہیں کر پاۓ۔۔۔گویا عورت کے وجود سے نکلنے کے باوجود آپ ابھی عورت کے وجود سے نہیں نکل پاۓ۔۔۔آپ کے ہاں انسانیت مر گٸ ہے ،آپ کے ہاں ہر سال 3000 ہزار سے اوپر بچے جنسی درندگی کا شکار بنتے ہیں اور مار دیے جاتےہیں۔۔آپ کو یہ جان کر اور بھی خوشی ہو گی کہ آپ کا اخلاق دُنیا کے پانچ غلیظ ملکوں کے اندر شمار ہوتا ہے۔۔۔آپ دُنیا کے پہلے ملک ہیں جہاں ڈارک ویب والوں کا کاروبار عروج پر ہے۔۔۔۔آپ وہ واحد احمق قوم ہیں جنہیں مذہب کے نام پر کہیں بھی استعمال کر لیا جاتا ہے۔۔ اسلام سلیقہ ہے اسلام اُوڑھ نہیں سکتے اسے اپنایا جاتا ہے۔
رسول ﷺ نے مسجدِ نبوی میں غیر مسلم کو اپنی عبادت سے نہیں روکا۔
رسول ِ خدا کو طاٸف والوں نے اتنا زخمی کیا کہ آپ کا دشمن تڑپ اُٹھا تھا مگر آپ کی زبان نے بددعا تو دور غلط الفاظ نہیں چُنے اور آپ ۔۔۔؟؟؟آپ لوگ مار دیتے ہو۔
امامِ حسینؓ کربلا میں چاہتے تو ایک یزیدی نہ بچتا مگر آپ صبر کی معراج قاٸم کرنے آۓ تھے۔۔۔۔اور آپ ۔۔۔۔؟؟؟آپ لوگ۔۔۔۔۔۔ مشال کیس میں اُسکی ماں کے الفاظ یاد آ جاتے ہیں۔۔۔”میرے بیٹے کی انگلیوں کی ہڈیاں بھی نہیں چھوڑیں ظالموں نے۔۔۔میں نے اُسکا ہاتھ پکڑا تو اُسکی اُنگلیاں ٹوٹی ہوٸی تھیں“۔
حضرت علیؓ نے جب فلسطین فتح کیا وہاں عیساٸی مذہب کے لوگ آباد تھے۔۔۔وہاں کا سب سے قدیم اور بڑا چرچ عیساٸیوں نے خود ہی خالی کر دیا کہ یہ ہم سے چھین لیا جاۓ گا۔۔۔کچھ مسلمان علیشان عمارت کے ملنے پر نازاں تھے۔۔۔۔حضرت علیؓ نے عیساٸیوں کو وہ چرچ مذہبی آزادی کے ساتھ واپس کر دیا کہ اسلام کا پہلا درس انسانیت ہے۔۔۔اور اگر آپ ہوتے۔۔؟؟آپ چھین لیتے۔۔۔
یقین کیجیے ۔۔۔اسلام رویہ ہے۔۔۔اسلام اخلاق ہے ،اسلام صبر ہے ،اسلام امن ہے ۔۔۔۔اور آپ۔۔۔؟؟؟
اِن تمام چیزوں میں گِر چُکے ہیں۔
آپ کے ہاں مذہب کاروبار بن گیا ہے۔۔۔آپ ایک جذباتی تقریر کے لاکھوں کما لیتے ہیں۔۔آپ تو قرآن بیچ کر کھانے والوں میں سے ہیں۔۔۔۔آپ وہی لوگ ہیں جن کی وجہ سے حضرت عثمان شہید کر دیے گۓ تھے۔۔۔۔آپ سب نے کلمہ پڑھا تھا۔۔۔آپ سب بس کلمہ پڑھتے آ رہے ہیں۔
- Advertisement -

2 COMMENTS

  1. بلکل حقیقت… انقلاب روس کے بعد مولانا عبید اللّہ سندھی صاحب روس گئے اور لینن سے ملاقات کی اور اسلام کی دعوت دی۔کہ آپ مزدور اور کسان کے حق کی بات کرتے ہیں اور ہمارے اسلامی نظام میں مزدور کا پسینہ خشک ھونے سے پھلے اس کی مزدوری کی ادائیگی کا حکم ہے اور اسطرح اسلام کے تمام محاسن بیان کئے۔لکھتے ہیں کہ لینن نے میری باتیں غور سے سنیں۔پھر سر اٹھا کر مجھ سے پوچھا کہ مولانا صاحب۔۔۔اپکا یہ نظام دنیا کے کس ملک میں عملی طور پر نافذ ہے۔کہتے ہیں کہ میں نے عالم اسلام پر نظر دوڑائی تو مجھے کہیں بھی نظر نہ آیا۔اور میرا سر شرم کے مارے جھک گیا اور میں لاجواب ہوا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Latest News

HBL PSL 2021 Complete Schedule and itinerary beginning on Feb 20 in Karachi & Lahore Venue

Hopefully, the 2021 version of the tournament will go according to plan, with the tournament kicking off on Feb 20 and end on March...
- Advertisement -

More Articles Like This

- Advertisement -